براؤزنگ زمرہ

لوگ کہانی

خطرناک کون…؟

میاں گیڈر، یہ تم کدھر کو جا رہے ہو؟۔ بی لومڑی! میں نے یہاں جنگل میں نہیں رہنا، شیر بہت ظالم ہے، بادشاہت کے رعب میں ہم جانوروں پر ظلم کرتا ہے۔ نہ یہاں پر کھانے کو کچھ خاص ہے، میں تو انسانوں کی بستی میں جا رہا ہوں۔ کیا اونچی اونچی عمارتیں ہیں…

ہیں‌ تلخ‌ بہت بندہ مزدور کے اوقات

چھمو کا اصل نام شمیم تھا، وہ لوگوں کے گھروں میں کام کرتی تھی اور اس کا شوہر عبدالشکور جسے سب شکورا کہتے تھے دیہاڑی دار مزدور تھا۔ دونوں میاں بیوی دن رات محنت مزدوری کر کے اپنا اور اپنے پانچ بچوں اور بوڑھے باپ کا پیٹ پالتے تھے۔ آج عبدالشکور…

اوڑھ لے گر مسلمان بیٹی حجاب

چٹاخ….چٹاخ… تیسرا تھپڑ کھاتے ہی وہ حیرت کا بت بنی، درد کی تاب نہ لاتے ہوئے لڑکھڑائی اور زمین پر ڈھیر ہوگئی۔ درد گال سے زیادہ دل میں ہوا تھا، تھپڑ کی آواز سناٹے میں اس قدر گونج دار تھی کہ مہمانوں سے بھرا گھر اس کے کمرے میں جمع ہو جاتا لیکن…

آہ! گریٹ عبدالقادر ’’میدان ‘‘ چھوڑ گئے

زندگی کا اختتام موت پر ہوتا ہے اور اس تلخ حقیقت پر مرنے والے نے زندگی کیسے گزاری ؟ اس سمیت بہت سے سچ سامنے آ جاتے ہیں۔ بحثیت مسلمان ہمارا ہر لمحہ امتحان ہے ،جبکہ انسان ہونے کے ناطے سے سارے راز سانسوں کا ناطہ ٹوٹ جانے پر کھل جاتے ہیں۔ کرکٹ…

حج کی سعادت حاصل کرنے والی پہلی برطانوی خاتون !

زینب کوبولڈ ، اسکاٹ لینڈ کے ارل آف ڈینمور کی صاحب زادی تھیں۔ ۱۸۶۷ میں پیدائش کے وقت ان کا نام لیڈی ایولن مرے رکھا گیا تھا۔ ان کا بچپن اپنی مسلم آیاوں کے ساتھ الجزائر اور قاہرہ میں گذرا تھا اور اسی دوران انہوں نے عربی پر عبور حاصل کر لیا…

بچھڑا کچھ اس ادا سے

ایک دور تھا کہ کراچی میں گھر سے نکلنے سے قبل لوگ خبریں ضرور سنا کرتے تھے۔اس کی وجہ یہ ہرگز نہ تھی کہ اہلیان کراچی کے لوگوں کو با خبر رہنے کا بڑا شوق تھا بلکہ اس کا مقصد یہ ہوتا تھا کہ جانے سے قبل یہ معلوم کرلیا جائے کہ کس کس راستے پر دھرنا…

’’صداقت اک کشمکش ‘‘

آگ! آگ آگ، مجھے بچاؤ ۔۔۔۔ یہ آگ مجھے جلا ڈالے گی۔ آہ! ہیری نوروز گہری نیند میں چلا رہا تھا- اس کے چہرے پر کرب و اذیت کے آثار تھے، جیسے وہ واقعتا ً’’جھلسنے‘‘ کے عذاب سے گزر رہا ہو- وہ اٹھ بیٹھا اور جنون کی کیفیت میں اپنے آپ کو ٹٹولنے…

مرثیہ اور میر انیس

ماہنامہ "روحانی دنیا لکھنو "میں منقول ہے کہ ایک بار میر انیس مجلس میں مرثیہ پڑھ رہے تھے کہ پاس سے راہ گیر گزراور دریافت کیا کہ کیا ہورہا ہے؟ کسی نے بتایا کہ انیس مرثیہ پڑھ رہے ہیں اور محبان اہلبیت ماتم کر رہے ہیں ۔اس پر وہ شخص چلایا سبحان…

!پاک بھارت دوستی کےخواہاں۔ کلدیپ نئیرکو جتنا میں جانتا ہوں

ہندوستان کے نامور صحافی اور دانشور کلدیپ نئیر ۹۵ سال کی عمر میں انتقال کر گئے ۔ ان سے میری پہلی ملاقات دسمبر ۱۹۵۹ میں دلی میں حکومت ہند کے پریس انفارمیشن بیورومیں ہوئی تھی جب وہ لال بہادر شاستری کے انفارمیشن افسر تھے ۔ انہیں جب معلوم ہوا کہ…

!اٹل بہاری واجپائی ۔غلط لوگوں میں گھراک صحیح شخص

ہندوستان کے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کے اس دنیا سے اٹھ جانے کی خبر سن کر مجھے 1959کے وہ دن یاد آگئے جب مجھے ان کو قریب سے دیکھنے کا موقع ملاتھا ۔ میں دلی میں پارلیمنٹ سے ایک پتھر کی مار کے فاصلے پر رائے سینا ہوسٹل میں رہتا تھا۔…