پلانٹ فار پاکستان ۔۔۔ سموگ سے نجات کا ذریعہ

782

اتوار مجھے تمام دنوں میں بہت پسند ہے۔ نہ دفتر جانے کی فکر اور نہ ہی صبح دیر سے اٹھنے کا خوف ۔۔۔!! ۔سکون اور اطمینا ن سے دیر تک سوتے رہنا، گھر والوں کے ساتھ گھومنا پھرنا ، سیر و تفریح پر جانا اورخوب مزے کرنا۔ مگر اس اتوار نہ چاہتے ہوئے بھی جلدی اٹھنا پڑا۔ ایسا نہیں تھا کہ گھر والوں کے ساتھ صبح صبح ناشتے کا پروگرام تھا یا کہیں شہر سے باہر جانا تھا۔ صبح سویرے ہی گھر کے لان میں عجیب سی گہما گہمی تھی۔ میں خواب خرگوشی کے مزے لے رہی تھی کہ ٹک ٹک ،کھٹ کھٹ اور قہقہوں کی آواز نے مجھے اٹھنے پر مجبور کر دیا۔ لان میں جاکر دیکھا تو سب گھر والے ذرا ذرا سے فاصلے پر ایک دائرے کی شکل میں میری4 سالہ بھانجی کے گرد کھڑے تھے جو اپنے ننھے ننھے ہاتھوں سے مٹی سے کھیل رہی تھی۔ ذرا غورکیا تو معلوم ہوا کہ و ہ گھر کے لان میں ننھا منا پودا لگانے کی کوشش کر رہی تھی۔ اسے سکول سے پلانٹنگ ٹری “Planting Tree” کا ٹاسک ملا تھا اور اسکے ٹیچر نے کہا تھا کہ جو بھی بچہ اپنے گھر میں پودا لگائے گا اسے 5 پوائنٹس ملیں گے۔ ایسے ہی ایک مشن پر گامزن پنجاب حکومت ہے جو وزیر اعظم عمران خان کے”Plant for Pakistan” مشن کو مکمل کرنے میں اہم کردار ادا کر ر رہی ہے۔

پاکستان کو ماحولیاتی آلودگی سے بچانے اور اس کو سر سبز و شاداب رکھنے کے لئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے 10 ارب نئے درخت لگانے کاعزم کیا ہے اور اس مہم کو ’’پلانٹ فار پاکستان‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔ وزیر اعظم پاکستان نے اس مہم کا باقاعدہ آغاز 2 ستمبر کو ہری پور سے کیا ہے ۔ اس سے پہلے عظیم رہنما عمران خان کی قیادت میں کے پی کے حکومت خیبر پختونخواہ میں ایک ارب درخت لگانے کا حدف مکمل کر چکی ہے ۔

ہرے بھرے درختوں کا یہ سونامی خیبر پختونخواہ سے ہوتا ہوا اب پاکستان کے دیگر صوبوں میں اپنی جڑیں مضبوط کر تا نظر آرہا ہے ۔ خاص طور پر پنجاب میں صوبائی حکومت10 ارب نئے درختوں کے ہدف کو مکمل کرنے میں خوب سرگرم نظر آرہی ہے ۔ کل ہی کی بات لے لیجیے، وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے ’’پلانٹ فار پاکستان ‘‘مہم کے تحت وزیر اعلیٰ آفس میں پودا لگایا ۔ اس سے قبل سینئیر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان، صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال ، ڈی سی لاہور کیپٹن انوار الحق ، صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ نارکوٹیکس کنٹرول حافظ ممتاز احمد،صو بائی وزیر اطلاعات و ثقافت فیاض الحسن چوہان اور صوبائی وزیر محنت و انسانی وسائل عنصر مجید نیازی بھی اس کار خیر میں اپنا کرادار ادا کر چکے ہیں ۔

پنجاب کے ضلع ٹوبہ ٹیک سنگھ میں 42 سیکنڈ میں 16ہزار نئے پودے لگانے کا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا گیا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان کی10ارب نئے درختوں کی سونامی مہم نہ صرف پاکستانی میڈیا بلکہ بین الاقوامی میڈیا کی بھی زینت بننے لگی ہے۔ وائس آف امریکہ اور گلف نیوز جیسی ویب سائٹس نے’پلانٹ فار پاکستان ‘‘ کے حوالے سے نیوز آرٹیکل شائع کیےہیں. بھارتی خبروں کی ویب سائٹ ’’دی ٹائمز آف انڈیا ‘‘ میں بھی 10ارب درختوں کی سونامی مہم کے خوب چرچے ہیں۔

بلاشبہ پلانٹ فار پاکستان مہم جہاں پاکستان کی بدحال آب و ہوا کوسر سبزو شاداب بنانے اور ماحولیاتی آلودگی کا خاتمہ کرنے میں کارآمد ثابت ہو گی وہیں رواں برس سموگ کے قہر سے بچنے کے امکانات بھی کہیں زیادہ نظر آرہے ہیں ۔ یہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی دور اندیش حکمت عملی ہی ہے کہ سموگ جیسےماحولیاتی تغیر سے نبردآزما ہونے کے لئے ابھی سے ہی عملی اقدامات کیے جا رہے ہیں. لاہور جیسے بڑے اربن ایریا میں، بڑے بڑے ترقیاتی منصوبوں کی پیش نظر شہر کے پرانے اور بڑےبڑے درختوں کو ختم کر دیا گیا ہے ۔ شہر لاہور کی خوبصورتی کو بحال کرنے اورفضائی آلودگی سے محفوظ رکھنے کے لئے درخت لگانے کی اہمیت اور بھی بڑھ جاتی ہے۔جتنے زیا دہ درخت ہوں گے، ماحول خوشگوارہے گا اور فضائی آلودگی کے امکانات کم سے کم تر ہوتے جائیں گے ۔یقیناصحت مند فضا میں سموگ کا جن بے قابو ہونے سے قاصر رہے گا۔

چرچے، دعوے اور وعدے ہر سیاسی دور کا اہم حصہ رہے ہیں مگر امید ہے کہ وزیر اعظم عمران خان صرف زبانی کلامی دعوں اور وعدوں کی سیاست نہیں کریں بلکہ ان پر عمل بھی کر کے دکھائیں گے جس کی ایک جھلک پاکستان کے ہر صوبے، ہر شہر میں ’’پلانٹ فار پاکستان‘‘ مہم کا والہانہ آغاز ہے ۔

خود مختاری پر یقین رکھنے والی خاتون ہیں۔ ایک سرکاری محکمے سے وابستہ ہیں۔ لکھنا ان کا شوق بھی ہے اور ضرورت بھی۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

تبصرے بند ہیں.