بوسہ دینے کی چیز ہے آخر

2,629

ننھے بچوں کی کلکاریوں اور ان کی خوبصورت شرارتوں پر برجستہ پیار کرنے کو جی چاہتا ہے۔ لیکن اس محبت و پیار کے مختلف نام اور طریقے بھی ہیں، ہاں وقت کی قید آج تک کوئی نہ لگا سکا۔

بوسہ، پپّی، کِس، پیار، چُما۔

ان الفاظ اور احساسات کا ذکر ہر دور کے شاعروں نے کھل کر اپنے اشعار میں کیا لیکن ہمارے معاشرے میں اسے کھلے عام کرنا معیوب سمجھا جاتا ہے۔ شوبز میں بھی کسی حد تک ‘سب چلتا ہے’ ہی چلتا ہے۔ فلم میں سینسر بورڈ کی قینچی سے ایسے مناظر بچ جائیں اور اسکرین پر نظر آجائیں تو کئی اک بس دیکھ دیکھ ہی آنکھوں کو ٹھنڈک پہنچاتے ہیں۔

ہاں یہ الگ بات ہے کہ بھارتی معاشرے میں یہ سب عام ہے اور فلمیں بوس و کنار کے بغیر مکمل ہی نہیں ہوتیں۔

تقریباً 5 سال قبل وینا ملک نےاپنی سالگرہ کے دن اپنے ہاتھ پر ایک منٹ میں ایک سو سینتیس بوسے وصول کیے اور ایک نیا ریکارڈ قائم کیا ہے۔ اس سے قبل بھارتی اداکار سلمان خان نے اپنے ہاتھ پر ایک منٹ میں ایک سو آٹھ بوسے حاصل کر کے یہ ریکارڈ بنایا تھا۔

وینا ملک کے مطابق “بوسے تو ہوتے ہی اچھے ہیں اور یہ ایک عقیدت کا اظہار ہوتا ہے۔ اگر آپ کو کوئی ہاتھ پر بوسہ دے۔ اگر ایک منٹ میں اتنے بوسے ملیں تو یہ بہت خوبصورت احساس اور ریکارڈ ہے۔ ”

veena_malik_kiss_1361966967_540x540

رواں سال فروری میں ہونے والی لکس اسٹائل ایوارڈ کی تقریب یاد ہے آپ کو۔ اس میں بھی جاوید شیخ نے اسٹیج پر ماہرہ کا بوسہ لینے کی کوشش کی جس پر سوشل میڈیا صارفین نے خوب تنقید کی اور ایسی باتیں بھی کہیں جو بوسہ دینے یا لینے سے بھی زیادہ نازیبا تھیں۔

pic_1519209868

فیفا ورلڈ کپ کے دوران برازیلین ٹی وی کی صحافی جولیا گوئماریس روس کے شہر یکاٹیرن برگ میں کیمرے کے سامنے رپورٹنگ کے فرائض انجام دے رہی تھیں کہ ایک شخص نے ان کے گال پر بوسہ لینے کی کوشش کی لیکن خاتون صحافی نے پیچھے ہٹ کر خود کو بچا لیا۔ اس موقع پر جولیا غصے میں آگئیں۔ بوسہ لینے کی کوشش کرنے والے شخص نے بھی فوراً معذرت کر لی۔

180625121356-01-julia-guimaraes-harassment-screengrab-exlarge-169

اس سے قبل جرمنی کے نشریاتی ادارے سے اسپورٹس رپورٹر کولمبیا کی جولیتھ گونزالے کو صحافتی ذمے داریوں کی انجام دہی کے دوران ایک مداح نےدبوچ کر بوسہ لیا تھا۔

خاتون رپورٹر نے ویڈیو انسٹا گرام پر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ‘احترام کیجیے! ہم اس طرز عمل کے مستحق نہیں۔ میں فٹبال کے مسحورکن لمحات سے آگاہ کرتی ہوں لیکن ہمیں پیار اور ہراساں کرنے کی حد کی شناخت ہونی چاہئیے۔’

afafa

گذشتہ سال ٹینس کے کھلاڑی21 سالہ میکزیم ہمو نے فرنچ اوپن کے دوران ایک لائیو انٹرویو میں رپورٹر مالے تھومس کو گردن سے پکڑ کر بوسہ دینے کی کوشش کی۔ خاتون صحافی بچنے اور پیچھے ہٹنے کی کوشش کرتی رہیں،

Maxime-Hamou-811165

یہ تو تھے کھیل اور شوبز سے جڑے پپّی، کس اور بوسے کے کچھ واقعات۔ آج کل تو سیاست میں بھی بوسوں کی بھرمار ہے۔ ذرا سیاست کی پھرکی کچھ پیچھے لے جائیں تو بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کی وہ ویڈیو یاد آجائے گی، جس میں وہ بڑے پیار سے کہہ رہے ہیں، ایک پپی اِدھر ایک پپی اُدھر۔

maxresdefault

الطاف حسین کی جانب سےمصطفیٰ کمال کے سر پر ہاتھ پھیرنے، ان کو گلے لگانے اور پھر پپی کرنے کی ویڈیو اور تصاویر بھی خوب وائرل ہوئی، لیکن مفادات کی جنگ نے اپنوں کو بیگانہ کردیا، آمنے سامنے کھڑا کردیا۔ پھر تم تم نہ رہے اور ہم ہم نے رہے۔

3045698071_2aa2e17a79

اور وہ سابق گورنر سندھ عشر ت العباد کو بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کی جانب سے ملنے والی چُمی۔

حقیقت تو یہ ہے کہ ایم کیو ایم ہی ہے کہ جس میں قائد/ سربراہ/ بانی نے کسی بھی کارکن کو’کِس’ کیا۔ ورنہ پاکستان کی سیاسی جماعتوں کے کارکن پارٹی قیادت سے محبت کا اظہار کرنے کیلئے کیا کیا انداز اپناتے ہیں۔ کوئی نہیں جانتا کب کون کہاں سے کس گال پر ایک “چمّی” ثبت کر دی جائے۔

الیکشن قریب آتے ہی رومانس کی فضا چل پڑی ہے۔ جس سے سب سے زیادہ متاثر نظر آرہے ہیں، پیپلز پارٹی کے کارکن، جو اپنے قائد یا لیڈر کو دیکھتے ہی ان کا منہ چومنے کیلئے اتاولے ہوجاتے ہیں۔

گزشتہ روز پیپلزپارٹی کے رہنما خورشید شاہ روہڑی جلسے میں دلچسپ صورتحال میں پھنس گئے۔ ایک پرستار خورشید شاہ کا بوسہ لینے پر اصرار کرتا رہا۔ بوسے کے بعد بھی پرستار مزید بوسے کیلئے بیقرارتھا۔ بڑی مشکل سے خلاصی پائی۔

201512_085920_updates

اس سے قبل بلاول بھٹو زرداری کے ساتھ بھی کراچی میں عبداللہ شاہ غازی کی درگاہ پر حاضری کے بعد ایسا ہی معاملہ پیش آیا۔ ایک شخص نےبلاول کو اجرک پہنانے کے دوران چہرے پر بوسہ لینے کی کوشش کی۔ تاہم بلاول نے سخت ناگواری کا اظہار کیا اور اس شخص کو جھڑک دیا۔

اس سے پہلے بنوں جلسے کے دوران کارکن نے اسٹیج پر بلاول کے گال کو چوما تو بی بی کے لعل نےلال پیلے ہو کر فوراً اپنا رخسار صاف کر لیا تھا۔

Bilawal-Kiss-And-Larkharana-30-06-2

شیخ رشید بھی اس صورتحال سے دوچار ہو چکے ہیں۔ نوازشریف نااہلی کیس کی سماعت کے دوران عدالت سے باہر آتے ہوئے ایک شخص نے شیخ رشید کا بوسہ لینے کی کوشش کی جس پر شیخ رشید برہم ہو گئے اور نوجوان کو تھپڑ رسید کر دیا۔

Sheikh-Rasheed-kiss-280x200

نواز شریف اور شیخ رشید کو آج کی نسل ایک دوسرے کا دشمن سمجھتی ہے لیکن نوے کی دہائی میں یہ دونوں ایک دوسرے پر جا ن چھڑکتے تھے اور ا ن کا سیاسی رومانس عروج پر تھا۔

6 جولائی کو بوسے کے عالمی دن پر سیاستدان اور ان کے پرستار کیا گل کھلاتے ہیں، بس دیکھتے جائیں۔

ارے ہاں ! وہ بوسہ جسے سجدہ کہا جا رہا ہے۔

کچھ روز قبل ہی عمران خان اور ان کی تیسری اہلیہ پاکپتن میں دربار حضرت بابا فرید شکر گنج پر حاضری کے حوالے سے وائرل ہوئی ویڈیو نے ہنگامہ برپا کردیا۔ فتوے جواب فتوے سے زیادہ تماشے لگ رہے ہیں ان پر افسوس ہی کیا جا سکتا ہے۔ دعویداران دہلیز کے بوسے کو سجدہ تعظیمی قرار دے کر ہنگامہ اٹھائے ہوئے ہیں۔ عمران خان کہتے ہیں انہوں نے خانقاہ کی دہلیز کو عقیدت سے بوسہ دیا۔ جبکہ مخالفین اسے سجدہ اور شرک سے تعبیر کر رہے ہیں۔ تاہم دلوں کا حال تو اللہ ہی جانتا ہے۔

1746144-imransajda-1530303348-879-640x480

ان بوسوں کو بھی سیاسی گُر ہی سمجھ لیں۔ عوام میں مشہور ہونے کا طریقہ۔ پہلے مخالفین سے نعرے لگوا کر جلسوں کی رونق بڑھوائی جاتی تھی، سیاسی شہید بننے کے لیے اداروں سے تصادم کیا جاتا تھا۔ لیکن جوتا، انڈے، ٹماٹر، سیاہی والے ٹرینڈ پرانے ہوگئے ہیں، کچھ نیا ہے تو و ہ ہے بوسے کی سیاست۔ اب اس کو عقیدت سمجھیں، محبت سمجھیں یا ہراساں کرنے کی کوشش۔

گئے وقتوں کے حکمرانو، ان داتاؤ۔ !!! تم نے برس ہا برس ہمیں کچھ نہ دیا۔ ووٹ، روٹی، کپڑا، مکان، عزت، جان سب ہی تو ہم سے لے لیا ہے، ہم تو آج تک صرف دیتے ہی آئے ہیں سو یہ بھی دے دیا۔ کہ یہ دینے کی چیز ہے اور ہم غریب ہو کر بھی بڑے دل والے ہیں۔ کیونکہ ‘بوسہ دینے کی چیز ہے آخر۔

ربعیہ کنول مرزا ایک مصنفہ، بلاگر اور پروڈیوسر ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

3 تبصرے

  1. moviesbelt.com کہتے ہیں

    haqiqat main yeh shakhs wese bhi bohat toham pasand or mushrik kisam ka insan hai agar siasi nazaria ko ek taraf rakh dia jay… is ne jo pure pakistan main dam or taweez karway hain babu or peeron se wazir e azam ban ne k lye.. is ki taweezon walo k sath ki hoy call record hain abhi youtube pe

  2. محب وطن کہتے ہیں

    بوسہ دینے کی چیز ہے تو آپ کا کیا خیال ہے؟

تبصرے بند ہیں.