ماروَل کی خلائی مخلوق

1,727

یہ ہرے رنگ کا اتنا بھاری بھرکم جن نما انسان اُڑ کیسے سکتا ہے؟ یہ عام سا آدمی اچانک لوہے کا لبادہ کیسے اوڑھ لیتا ہے؟ یہ اتنا ہینڈسم نوجوان کیا واقعی 80 سال کا ہے؟ اس کالی بیوہ کے ہاتھوں میں اتنی بجلی کیسے بھری ہے؟ اور یہ مکڑی کی چال ڈھال والا انسان ہاتھ سے جالے کیسے بُن سکتا ہے؟

خبردار جو آپ نے Marvel اسٹوڈیوز کی فلم Avengers دیکھتے وقت اس طرح کے سوال کیے۔ ۔ جب بھی جائیں ذہن میں رکھ کر جائیں کہ Comic موویز میں سب کچھ ممکن ہے۔ آپ کی سوچ جہاں ختم ہوتی ہے وہیں سے ماروَل کی شروع ہوتی ہے۔ اَوینجرز سیریز کی ہر نئی فلم میں ہر دفعہ ہر سپر ہیرو کی انٹری نئے انداز میں ہوتی ہے۔ ایسا ہی اس بار بھی ہوا Avengers: Infinity War میں۔

avengers-infinity-war-feature

ویسے تو فلم کا آغاز مشہور کرداروں ہَلک، تھور اور “لوکی”سے ہوتا ہے لیکن دبنگ انٹری ٹونی اسٹارک عرف “آئرن مین” کی ہے۔ پچھلی فلموں میں کبھی اِن کا آئرن سوٹ اُڑ کر اُن تک پہنچتا ہے تو کبھی ایک بریف کیس سے برآمد ہوتا ہے لیکن اس بار۔ ۔ ۔ ۔ نہیں نہیں سب بتا دیا تو فلم کا مزا کرکرا نہ ہوجائے۔ دلچسپ بات یہ کہ سوٹ پہنتے ہی خود ٹونی اسٹارک واضح کرتے دکھائی دیے کہ یہ کون سی ٹیکنالوجی ہے۔

iron_man_avengers_infinity_war_hd

“کیپٹن امریکا ” یعنی اسٹیو راجرز بھی بھرپور انداز میں ایک جاندار اور نئے لُک کے ساتھ جلوہ گر ہوئے۔ البتہ سیاہ لباس میں ملبوس نتاشہ عرف بلیک وِڈو (Black Widow) اپنی علیحدہ شناخت نہ کروا پائیں۔ بیرونی طاقتوں سے زمین کو بچانے کی ذمہ داری پر مامور ایجنسی “شیلڈ” کی ایک عام سی ایجنٹ ہی لگیں حالانکہ یہ کردار نبھانے والی اسکارلیٹ جوہانسن کئی کامیاب فلمیں دے چکی ہیں۔

black-widow-avengers-infinity-war-1089248-1280x0

اب تک تاریخ کی چند مہنگی ترین فلموں میں سے ایک، یہ فلم اس اعتبار سے بھی بہت بڑی ہے کہ اس میں مارول نے اپنے کئی منفرد سپر ہیروز کو ایک ساتھ اکٹھا کردیا جیسے کہ گارڈینز آف دا گلیکسی کی اسٹار کاسٹ وغیرہ وغیرہ۔

اوینجرز، انفینٹی وار کے بجائے اس فلم کا نام Avengers: Star Wars بھی رکھا جاسکتا تھا، اس بار زمین سے زیادہ دوسرے سیاروں اور ستاروں کی سیر جو کروائی گئی ہے۔

فلم کے مرکزی ولن “تھانوس” چھ انمول پتھروں کی تلاش میں ہوتا ہے جو کائنات کی ہر شے کو کنٹرول کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ خلا، حقیقت، طاقت، دماغ، روح اور وقت۔ غیر معمولی صلاحیتوں کے حامل ان تمام پتھروں کو تھانوس ایک ایک کرکے حاصل کرنے کے لیے راستے میں آنے والی ہر دنیا اور اس کے باسیوں کو تہس نہس کردیتا ہے۔ دراصل وہ خدا بننا چاہتا ہے (نعوذوباللہ) جو زمان و مکاں سے مبرا ہو، جس کے پاس عقلِ کُل ہو، وقت جس کے تابع ہو، طاقت کا منبہ، مطلق العنان ہو، حاضر بھی ہو اور غائب بھی۔ لیکن جناب یہ فلم ہے لہٰذا اسے فلم کی حد تک ہی سوچا اور دیکھا جائے ورنہ حقیقت سے اس کا دور دور تک کوئی تعلق نہیں۔ اس وِلن کو ماروَل کے سُوپر ہیروز ہی سنجیدہ لیں تو بہتر ہے ورنہ “تھانوس” کے خلاف جگہ جگہ احتجاج، پلے کارڈز اور بینرز دکھائی دیں گے۔

Hot-Toys-Infinity-War-Thanos-007-928x483

تیس کروڑ ڈالر سے زائد کی لاگت سے تیار اس فلم میں کمپیوٹر جنیریٹڈ اِمیجز، اینی میشنز، کروما، تھری ڈی، ساؤنڈ افیکٹس، ویژول افیکٹس، بیک گراؤنڈ اسکور آپ کو محو رکھیں گے۔ البتہ طویل دورانیہ ہونے کے باعث شاید وہ لوگ اکتاہٹ کا شکار ہوجائیں جنہوں نے اس سے پہلے کبھی کوئی پارٹ نہیں دیکھا یا جو Comic کہانیوں میں کم دلچسپی رکھتے ہوں۔ پھر وہی بات، ، ، ، زیادہ سوال نہیں کرنے۔ فی الحال اپنی ریلیز سے لیکر تادم تحریر یہ فلم 90 کروڑ ڈالر سے زائد کا بزنس کرچکی ہے اور ابھی تو یہ شروعات ہے۔ سوپر ہیروز فلموں کی خاص بات یہ ہے انہیں دیکھنے کے لیے 8 سے 80 سال تک کے بچے بے قرار رہتے ہیں، لیکن مارول اسٹوڈیوز کو یہ خیال رکھنا چاہیے کہ ان کے سوپر ہیروز، بچوں میں بے انتہا مقبول ہیں تو فلم کی ریلیز کم از کم امتحانات کے دنوں میں نہ ہو (یہ موقف چند پڑھاکو بچوں کے والدین کا ہے)۔

ماروَل سوپر ہیروز کے Fans شاید اس بار کچھ افسردہ ہوجائیں کیونکہ چند کردار (نام جان بوجھ کر نہیں لکھے) اس فلم کے آخر میں تحلیل ہوجائیں گے (بظاہر مر جائیں گے)۔ مرکزی ولن تھانوس تمام تر قوتوں کا مالک بن جائے گا لیکن امید پر ماروَل قائم ہیں۔ فلم کے آخر میں اینڈ کریڈٹس کے بعد ہمیشہ کی طرح اس مارول مووی میں بھی اگلے sequel یعنی تسلسل کا اشارہ ملتا ہے۔ جب ایک آنکھ سے محروم شیلڈ ایجنٹ نِک فیوری تحلیل ہونے سے پہلے ایک پیغام بھیجتا ہے اور یہ پیغام پہنچ بھی جاتا ہے، کہاں اور کس کو؟ یہ ایک معمہ ہے۔ فلم بینوں کو زمین پر پڑے نِک فیوری کے Pager پر صرف نیلے اور لال پس منظر پہ آٹھ کونے والا ستارا دکھائی دے گا۔ یہ اسٹار اگلی مووی کی سپر اسٹار کی جانب اشارہ ہے۔ جی ہاں اب اگلے پارٹ میں “کیپٹن مارول” کا کردار متعارف کرایا جائے گا جو ایک بہادر، جاں باز اور غیر معمولی صلاحیتوں کی مالک “خوبرو خاتون” ہوگی اور یہی خاتون کیریکٹر اب عالمِ اَرواح میں موجود دنیا سے تحلیل شدہ سوپر ہیروز کے لیے مسیحا ثابت ہوگی۔ (حیرت ہے اتنی تباہی اور میڈیا پر خبریں آنے کے باوجود وہ ایک پیغام کا انتظار کررہی تھیں)۔ خبردار!!! میں نے کہا تھا ایسا کوئی سوال نہ کرنا، مارول کی دنیا میں سب کچھ ممکن ہے۔

marvel-movies-inline

خیر کیپٹن ماروَل یا carol danvers کا کردار 2019ء میں ماروَل اسٹوڈیوز کی آنے والی فلم “کیپٹن ماروَل” میں Brie Larson (جو فلم Kong: Skull Island میں جلوہ گر ہوچکی ہیں) ادا کر رہی ہیں اور ظاہر ہے انفنیٹی وار کے اگلے پارٹ میں بھی وہی اِن تمام ہیروز کو ایک بار پھر دنیا میں واپس بھی لائیں گی اور سب کو تھانوس کے عذاب سے بھی بچائیں گی۔ کہتے ہیں ہر کامیاب مرد کے پیچھے ایک عورت کھڑی ہوتی ہے لیکن اس فلم کے کامیاب ولن تھانوس کے پیچھے اب ایک خاتون پڑی ہوگی اور وہ بھی ہاتھ دھو کر۔ خیر اس نئے کردار کا بھی انتظار رہے گا، یہی Marvellous ماروَل کا خاصہ ہے، جاتے جاتے آپ کو Teaser دیتے جانا تاکہ آپ پچھلی کو بھولیں بھی ناں اور اگلی کا انتظار بھی کریں۔

ڈسکلیمر:

  1. یہ تجزیہ ایک ذاتی رائے ہے جس کا کسی اور کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔
  2. جو فلم آپ نے دیکھی نہ ہو اس پر سنی سنائی باتوں کی بنیاد پر تعریف اور تنقید بے جا ہے۔
  3. فلم سنیما کے لیے بنتی ہے اور فلم کی کامیابی کا انحصار فلم بینوں کے سنیما جاکر دیکھنے پر ہے۔
  4. ضروری نہیں ہر فلم آپ کے مزاج کی ہو، اسی لیے تھوڑی بہت معلومات حاصل کرکے سنیما کا رخ کریں تو پیسہ اور وقت دونوں بچیں گے۔
  5. فلم کا مقصد فلم سے بڑا ہوتا ہے۔ یہ آپ کو ہنسانے، رلانے، کچھ یاد دلانے، کچھ بھلانے اور کچھ بتانےکے لیے ہوتی ہے نہ کہ کچھ کھونے اور کچھ پانے کے لیے۔
سلمان حسن دنیا نیوز کے سینئر اینکر اور پروڈیوسر ہیں۔ گزشتہ 13 سال سے میڈیا انڈسٹری سے وابسطہ ہیں اور جیو نیوز اور سما ٹی وی جیسے اداروں کے لیے کام کرچکے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

2 تبصرے

  1. Naam mai Kia rakha hai کہتے ہیں

    Don’t have precious time to watch this stupidity.
    Read you stupid column, that’s more than enough.

  2. عطاءالمصطفے کہتے ہیں

    بیڑہ غرق، سارا مزہ خراب کر دیا،۔ ساری سٹوری لکھ دی۔

تبصرے بند ہیں.