براؤزنگ زمرہ

جگ بیتی

طبلِ جنگ بج چکا…

ان دنوں ملکی سیاست میں گرما گرمی عروج پر ہے، عرصہ دراز تک قرنطینہ میں رہنے والی اپوزیشن نے موقع ملتے ہی حکومت کے خلاف محاز کھول دیا۔ سال 2018 کے الیکشن جیتنے کے بعد تحریک انصاف کی جب حکومت بنی تو ماضی کی طرح اس وقت بھی شکست کی شکار تمام…

کیا گوری رنگت پر بحث جائز ہے؟

گوری رنگت اور انگریزی، یہ ہمارے معاشرے کے دو پسندیدہ خصائص مانے جاتے ہیں، بندہ گورا بھی ہو اور پھر فر فر انگریزی بھی بولے واہ واہ تو کرنا بنتا ہی ہے۔ یہ ہمارے معاشرے کی اجتماعی سوچ ضرور ہے تاہم یہ سچ ہرگز نہیں۔ بے شک اکثریت انہی دونوں…

ذ ہنی صحت پر بھی توجہ دیجئے

عالمی ادارہ صحت کے زیر اہتمام دنیا بھرمیں گزشتہ روز ذہنی صحت کا عالمی دن منایا گیا۔ بلاشبہ ذہنی صحت پر جسمانی صحت و تندرستی، خوشی و راحت کی کیفیت کا دارومدار ہوتا ہے۔ اگر انسان کسی وجہ سے ذہنی طورپر صحت مند نہ ہو تو اس کے اثرات پورے بدن پر…

استاد بنئے تھانیدار نہیں…

پوری کلاس سہمی کھڑی تھی، ایسا نہیں تھا کہ کسی کو کچھ آتا نہیں تھا یا کسی میں کچھ سیکھنے کی لگن نہیں تھی۔ بات محض اتنی سی تھی کہ ریاضی کی استانی میڈم ارسلا سے سب ایسے ہی خوفزدہ رہتے تھے۔ کیونکہ کبھی وہ کان کھینچنے لگتیں تو کبھی معمولی سا…

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کا مستقبل؟

پاکستان میں حزب اختلاف کی بڑی جماعتوں مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی، جمیعت علمائے اسلام (ف) نے حکومت مخالف تحریک چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) میں شامل دیگر چھوٹی جماعتوں کو بھی گنا جائے تو یہ 11 جماعتی اتحاد بنتا…

نام نہاد حاجی نمازی لوگ!

ارشاد باری تعالیٰ ہے : ''جو شخص دنیا کی زندگی اور اس کی زینت پر فریفتہ ہوا چاہتا ہو، ہم ایسوں کو ان کے کُل اعمال ( کا بدلہ ) یہیں بھرپور پہنچا دیتے ہیں اور یہاں انھیں کوئی کمی نہیں کی جاتی، ہاں یہی وہ لوگ ہیں جن کے لئے آخرت میں سوائے آگ…

انصاف کا قتل اور عافیہ صدیقی

وطن عزیزپاکستان میں کتنی ہی سیاسی و مذہبی جماعتیں موجود ہیں جوکسی بھی کام کے لیے اگر بھرپور کوشش کریں تو کچھ بعید نہیں کہ وہ اپنی جدوجہد کے مطابق کچھ حاصل نہ کر سکیں۔ بہت سی ذمہ داریوں میں سے ایک ہماری برسر اقتدار حکومت اور سیاسی و مذہبی…

آخر کب تک….

آج سے تقریبا دس سال قبل عدالت عالیہ کے حکم کے پر دہشت گردی سے بچاؤ کے لئے ہماری درسگاہ، ادارہ منہاج القرآن کے باہر حفاظتی رکاوٹیں رکھی گئی تھیں، گزشتہ دور حکومت میں تجاوزات ہٹانے کے نام پر سرکار کی طرف سے ایک بھرپور پولیس ایکشن کیا گیا…

کیا ہم انسان نہیں؟

وہ مسلسل بھاگے جا رہی تھی اور 2 اوباش جوان اس کا ایسے پیچھا کر رہے تھے کہ جیسے وہ ان کا شکار ہو اور ہاتھ آتے ہی بھنبھور دینا چاہتے ہوں۔ وہ کتنا بھاگتی آخر تھک کر گر گئی اور وہ اوباش اس پر ٹوٹ پڑے۔ کوئی لاتوں سے تو کوئی گھونسوں سے اسکی…

عورت مظلومیت کی داستان‌…

عورت ہمیشہ مظلومیت کی داستان رہی ہے، ہر دور میں اس کا استحصال ہوا۔ حوا کی بیٹی پر ظلم ازل سے شروع ہوا، تاحال جاری ہے، نہ جانے کب ختم ہو گا۔ خدا تعالیٰ  نے جتنا عورت کو نازک بنایا ہے اتنا ہی زیادہ انسانی معاشرے میں ظلم و ستم ڈھایا جاتا ہے ۔…