براؤزنگ زمرہ

آس پاس

کیا مجرم کو سزا دینے کے بعد جرم ختم ہو جاتا ہے؟

ملک میں خواتین اور بچیوں سے زیادتی کی خبروں کا بازار گرم تھا کہ اچانک فیصل آباد سے خبر آئی کہ ایک مشہور برانڈ کے ٹرائی روم میں لگایا گیا کمیرہ پکڑا گیا ہے۔ میڈیا پر خبر آئی، دو چار لوگ گرفتار ہوئے اور سارا کا سارا ملبہ سویپر پرڈال دیا گیا۔…

پیرس میں مک مکا

پاکستان میں جسے دیکھو یورپ کی مثال دیتا نظر آتا ہے۔ کسی کو وہاں کا طرز معاشرت پسند ہے تو کوئی وہاں پر انسانیت تلاش کرنے میں مصروف ہے۔ کسی کے نزدیک مغرب کا سیاسی اور معاشی نظام دنیا میں ایک مثال ہے۔ تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان مغربی…

پدماوتی کے بعد اب جھانسی کی رانی کے خلاف معرکہ

ہندوستان میں فرقہ پرستی نے اب مذہب کی حدود سے نکل کر قبیلوں اور برادریوں کو اپنی گرفت میں لے لیا ہے۔ پچھلے سال پدماوتی فلم کے خلاف راجپوتوں کی کرنی سینا نے قیامت ڈھا دی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ فلم میں راجپوت ملکہ اور ہندوستان کے بادشاہ علائو…

ویلنٹائن سے پہلے کچھ چیزیں حرام تھیں

فروری کا مہینہ جیسا ہی شروع ہوتا ہے ہر طرف ایک چیز کا تذکرہ شروع ہوجاتا ہے اور وہ ہے ویلنٹائن ڈے، جی ہاں عام فہم میں اسے محبتوں کا دن کہتے ہیں تاہم جیسے جیسے حالات بدلے اس کو فحاشی کے دن کا لقب ملا۔ تحریر کے ابتدا میں ہی آپ قارئین کے سامنے…

14 فروری، یوم حیا پاکستان

اسلامی جمہوریہ پاکستان میں قومی سطح پر کئی دن منائے جاتے ہیں، جن میں شامل 14 اگست کو یوم آزادی،23 مارچ کو یوم پاکستان اور 6 ستمبر کو یوم دفاع منایا جاتا ہے مگر اس سال ایک مزید دن جنم میں آیا ہے، جو کہ 14 فروری یوم حیا پاکستان ہے۔ تقریباً اس…

المیہ اس ملک کی جنونیت کا 

عاصمہ جہانگیر، ایک للکارتی وکیل،حق کی آواز، ایک با ہمت اور حوصلہ مند خاتون ایک عہد کی صورت رخصت ہوئی۔ عاصمہ جہانگیر کی زندگی اور بے تحاشا خدمات پر بہت کچھ لکھا جا سکتا ہے لیکن آج میں اس مذہبی، سیاسی اور معاشرتی جنونی قوم کا المیہ بیان کرنا …

ویہلا ٹائم ڈے

ہم پیدائشی عاشق ہیں اور ہمارا نام بھی عاشق ہے۔ اماں حضور فرماتی ہیں کہ ہم نے پیدا ہوتے ہی ایک خوبصورت نرس کو آنکھ ماری تھی۔ ممکن ہے یہ بیان مبالغہ آرائی پر مبنی ہو۔ اور یہ بھی ممکن ہے کہ لاعلمی کی بنیاد پر اماں حضور نے یہ تہمت ہم پر دھری ہو…

عاصمہ جہانگیر کی موت پر جہالت کا جشن

یقین مانیے عاصمہ جہانگیر کی موت کی خبر سن کر ایسا دکھ ملا کہ خود کو سنبھال نہیں پارہا، ان کی کسی بات سے تو اختلاف یقیناً کیا جا سکتا ہے مگر انکی جرت مندی اور بہادری سے ہرگز انکار نہیں کیا جاسکتا۔ وہ ایک خاتون ہوتے ہوئے مردوں سے بھی زیادہ…

دہشتگردی ختم کرنے کا شرطیہ نسخہ

کہتے ہیں ایک بادشاہ کی عدالت میں کسی ملزم کو پیش کیا گیا۔ بادشاہ نے مقدمہ سننے کے بعد اس کے قتل کا حکم دیا۔ جب ملزم کوقتل گاہ کی جانب لے جایا جا رہا تھا تو اسے سوچ آئی کہ موت تو اب آکر ہی رہنی ہے تو اس نے بادشاہ کو برا بھلا کہنا شروع کر…

بے زباں پر ظلم نہ کر، یہ خدا سے تیرا شکوہ کریں گے

یوں تو پاکستان سمیت دنیا بھر میں اس بات کا دعویٰ کیا جاتا ہے کہ جانور بھی اس معاشرے کا حصہ ہیں اور شفقت کے حقدار ہیں۔ بہت سے لوگ اپنی اس سوچ کو اجاگر کرنے کی خاطر گھروں میں جانور اور پرندے لا کر پالنا شروع کردیتے ہیں۔ پاکستان میں بھی اس شوق…