براؤزنگ زمرہ

لوگ کہانی

سانحہ اے پی ایس: بہادر طالب علم احمد نواز کا انٹرویو

احمد نواز ان بچوں میں شامل ہیں جو سانحہ اے پی ایس میں بچ گئے تھے۔ جب انہیں اسپتال لایا گیا تو یہ شدید زخمی تھے، انہیں بہتر علاج کے لیے برطانیہ بھیجا گیا جہاں یہ اب تک مقیم ہیں۔ ان سے تفصیلی بات چیت کرنے کا موقع ملا جسے ایک انٹرویو کی صورت…

محسن کی بند قبا سے  چند ریزہ حرف

محسن نقوی کا اصل نام سید غلام عباس تھا اور یہ محلہ سادات میں ڈیرہ غازی خان میں 5مئی 1947کو پیدا ہوئے۔ گورنمنٹ کالج بوسن روڈ ملتان سے گریجویشن اور پھر جامعہ پنجاب سے ایم اے اردو کیا تھا۔ گورنمنٹ کالج بوسن روڈ ملتان سےگریجویشن کرنے کے بعد جب…

مشرقی و مغربی جرمنی کے اتحاد کا مصور.. ہیلمٹ کوہل

دوسری جنگ عظیم 1939ء  تا 1945ء  کے بعد جرمنی دو حصوں میں تقسیم ہوچکا تھا مشرقی جرمنی پر روس کا کنٹرول تھا جبکہ مفربی جرمنی امریکا, برطانیہ اور فرانس کے زیر اثر آچکا تھا۔ ایک جرمن قوم دو حصوں میں تقسیم ہوچکی تھی اور ان کے درمیان دیوار برلن…

احمد فراز کا آخری مشاعرہ

بارہ جنوری 1931ء خانہ برق میں جس تجلی کا ظہور ہوا وہ نوجوانی میں گوہر و شرر برقی کے نشیبوں سے ہوتی اپنے فراز کو پہنچ گئی اور ظلمتِ شب میں 14 شمعیں روشن کرنے کے بعد دس سال سے ایچ ایٹ اسلام آباد کی خاک کو چمکا رہی ہے۔ غیر معمولی شخصی قامت کے…

ہم بھی فراز سے واقف ہیں

کوہاٹ کے سادات گھرانے میں 12 جنوری 1931 کو پیدا ہونے والا ایک لڑکا جس کا نام سید احمد شاہ رکھا گیا۔ لڑکے کے والد سید محمد شاہ برق پیشے کے لحاظ سے اکائونٹینٹ تھے جو ایک سخت مزاج اور ڈسپلن کے دلدادہ شخص تھے۔ بیٹے کے گھر تاخیر سے آنے پر اکثر…

چینی قوم اور ان کی وقت کی پابندی کی عادت

میں نے اپنی زندگی کے دو سال چائنہ میں گزارے۔ ان دو سالوں نے مجھے بہت کچھ سکھایا اور میں ایک مختلف مگر بہتر انسان کے طور پر پاکستان واپس آئی۔ ان خوشگوار تبدیلیوں کا سہرا میرے چینی پروفیسرز، دنیا بھر سے آئے ہم جماعتوں اور میرے چینی دوستوں…

“پاکستانی قوم کا مسیحا عبدالستارایدھی”

آج ہم ایک ایسے برق رفتار و بے حس معاشرے میں رہ رہے ہیں جہاں ہر کوئی اپنے مسائل اور درد کی گٹھڑی اٹھائے محض اپنا رونا رو رہا  ہے۔ کسی کو دوسرے کی کوئی فکر نہیں ہے۔ بس ہر انسان کی سوچ و عمل صرف اور صرف اپنی ذات کے فائدے تک محدود ہے۔ اولاد…

نا اہل اکبری اور اہل اصغری

مرۃ العروس  اردو زبان کا ایک مشہور ناول ہے۔ یہ ناول ڈپٹی نذیر احمد دہلوی نے لکھا تھا۔ اس ناول کے کچھ کرداروں نے دھوم مچا دی تھی۔ اکبری، اصغری اور ماما عظمت کے کرداروں پر مبنی کہانیوں کو ہماری اردو کی نصابی کتابوں میں بھی شامل کیا گیا۔ اکبری…

کباڑ خانہ

او ئےچھوٹے! اپنا کچرا ہٹا ادھر سے۔ کیا ایک میل دور تک اپنی دکان کا کباڑ بکھیر دیتے ہو۔ گاہک اندھے ہیں کیا جو گزرنے کا راستہ بھی نہیں چھوڑتے؟ باپ دادا کی سڑک سمجھ بیٹھے ہو۔ ساتھ والی دکان کے غصے بھرائے توند لٹکے آدمی نے ٹین کا کنستر اٹھا کر…

“تہانوُں کی؟”

چاند کی روشنی میں ہم نے ڈرتے ڈرتے اپنی "سر ی" کو بلند کر کے نگاہ مرد مومن سے ارد گرد کا جائزہ لیا تو تقدیر بدل چکی تھی۔ متحارب قوتیں پسپائی اختیار کر چکی تھیں۔ مشتعل افراد اپنا محاصرہ اٹھا لےگئے تھے۔ گویا ہم "پین دی سری" والی صورت حال سے…