براؤزنگ زمرہ

آوارہ گردی

یہ جو لاہور سے محبّت ہے

ایک عالم لاہور کے عشق میں مبتلا رہا ہے۔ مگر حیرت ہے کہ شاعری میں اس شہر کے لیے کوئی قابلِ ذکر طبع آزمائی نہیں ہوئی جسے اہلِ لاہور فخر سے سُنا سکیں۔ مثلاً اسی مبہم شعر کو لیجئے جس کا پہلا مصرع اس مضمون کا عنوان ہے۔ یہ جو لاہور سے محبّت ہے یہ…

سہالہ ریلوے اسٹیشن کی سیر اور کچھ تجاویز

فرنگیوں نے سکھوں کو لگام دینے کے بعد پوٹھوہاری شیروں کو بیلٹ باندھنے کا پروگرام بنایا۔ راولپنڈی برٹش آرمی کی ناردرن کمانڈ کا ہیڈ کوارٹر مقرر ہوا۔ لاہور اور پشاور کے درمیان ہنگامی بنیادوں پر ریلوے ٹریک بچھایا گیا۔ جگہ جگہ ریلوے اسٹیشن بنا…

سسی کا شہر بھنبھور اور داہر کا دیبل

نیشنل ہائی وے پر کراچی سے ٹھٹھہ کی طرف جائیں تو ساٹھ کلومیٹر کے فاصلے پر دھابیجی اور گھارو کے درمیان سسی کے شہر بھنبھور اور قاسم و داہر کے دیبل کے آثار ہیں۔ ساتھ ایک میوزیم ہے جس میں نوادرات کو زمانی ترتیب سے رکھا گیا ہے۔ میں نے بھنبھور…

معجزہ فن کی ہے خونِ جگر سے نمود

کہتے ہیں کبھی ٹھٹھہ عالم میں انتخاب تھا۔ اس کا شمار برصغیر کے مشہور شہروں میں ہوتا تھا۔ یہ علم و فضل اور تہذیب و ثقافت کا مرکز تھا۔ یہاں منتخبِ روزگار رہتے تھے۔ لیکن اب یہ ماضی کا مزار بن چکا ہے۔ اسم ٹھٹھہ اگر ملتان کا ہم قافیہ ہوتا تو اس…

پاکستان میں سیاحت کیسے بچائیں؟

کاغان جاتے ہوئے ایک سفر کے دوران مجھے بہت افسوس ہوا جب میں نے دریائے کنہار کے پاس جا بجا چپس اور ٹافیوں کے ریپر دیکھے۔ دو منٹ کو میں نے یہ ضرور سوچا کہ پاکستان کے سیاحتی مراکز کو کوئی غیر کیا نقصان پہنچائے گا جبکہ ہم خود ہی اس کی تباہی میں…

تھر کا مور

اس روز کوئی چھ ماہ بعد وہ اپنی رہائش گاہ سے نکلا، بیساکھیوں کے سہارے چند سو قدم چل کر 'گرجا چوک لاہور کینٹ' گیا، اے ٹی ایم سے کچھ پیسے نکلوائے، بڑے مان اور چاو سے خوبصورت پھولوں کا ایک گلدستہ بنوایا۔ گلدستہ ہاتھ میں تھامے ہوئے اس کے چہرے…