براؤزنگ زمرہ

تجربہ گاہ

گوڈے گوڈے رم جھم 

کل دفتر سے گھر جاتے ہوئے راستے میں گھڑی دیکھی تو نمازمغرب کا ٹائم ہو رہا تھا، سوچا کہ ساتھ والی گلی میں ہی تو مسجد ہے مغرب پڑھ کے گھر چلا جاتا ہوں۔ باہر کی گرمی اور پسینے سے شرابور جسم کے ساتھ مسجد میں داخل ہوا۔ مسجد میں اے سی کی ٹھنڈک نے…

شارٹ کٹس

ہم من حیث القوم شارٹ کٹ کے دلدادہ اور محنت سے جی چرانے میں ہی عظمت سمجھتے ہیں۔ جسے دیکھیے جلد از جلد کی دوڑ میں اخلاقیات کو بالاے طاق رکھے اپنے اپ کو صف اول میں لانے کی دوڑ دھوپ میں لگا ہے۔ ہم صرف اپنے فوری فائدے اور نقصان کو ذہن میں رکھ کر…

طوائف اور طوائف الملوکی

مرزا عباداللہ بڑے سے پتیلے میں پانی کو مسلسل بہتا دیکھ کر کہہ رہا تھا۔ "پہلوان جی پانی کی قدر جاننا ہو تو ان سے جانیے جو بوند بوند کو ترستے ہیں۔ پانی اس طرح بہہ رہا ہے جیسے چاندی جھرنوں میں۔ اس نعمت مترقبہ اور نعمت جلیلہ کو تو اس طرح…

مغرور لڑکیوں، لڑکوں کی عزت کرو!

ایک وقت تھا جب لڑکیاں اِتنی کم عِلم ہوا کرتی تھیں کہ بیاہتے ہوئے سِیانی عورتيں یہ مشورہ دیا کرتی تھیں کہ مَرد کے دِل میں جانے کا راستہ اس کے معدے سے ہوتا ہوا گذرتا ہے۔ اب نیا دور ہے تو یہ لڑکیاں ہمیشہ مَرد کو نیچا دیکھا کر اپنے آپ کو عالمی…

سمندر کنارے بسنے والے پانی سے محروم کیوں؟

کراچی پاکستان کا سب سے بڑا شہر ہے۔ اسی اعتبار سے کراچی کی آبادی بھی پاکستان کے دیگر شہروں سے کئی گنا زیادہ ہے۔ پاکستان کے اس شہر کو منی پاکستان کہا جاتا ہے۔ اس شہر میں پاکستان بھر سے لوگ روزگار کی تلاش میں ہجرت کر کے آتے ہیں اور یہیں کے…

پاکستان اور بچوں کے دل کے پیدائشی امراض

بچوں میں دل کے پیدائشی نقائص کا علاج نہ صرف پیچیدہ اور گراں ہے بلکہ اِس کی سہولت صرف محدود اور مخصوص ہسپتالوں میں ہی دستیاب ہو سکتی ہے۔ اس کی وجہ کثیر جہت ہُنر مند ڈاکٹروں کی ٹیم کی موجودگی اور ہم آہنگی سے کام کرنے کی صلاحیت اور ضرورت ہے۔…

شہر کراچی میں پانی کے مسائل

ایک وقت تھا جب کراچی والے گاؤں والوں سے پوچھتے تھے کہ کیا تمھارے گھر بجلی آتی ہے۔ آج گاؤں والے کراچی والوں سے پوچھتے ہیں کہ کیا تمھارے گھر پانی آتا ہے؟ کراچی شہر میں پانی کی بگڑتی ہوئی صورتحال چل رہی ہے جس سے بے سکون شہریوں کا مزید سکون…

ایک زینب کا قتل ہوا تھا، یاد ہے؟

یہ بات قابل فخر سمجھنی چاہئیے یا اس معاملے کی سنگین نوعیت پر ضمیر کو جنجھوڑتے ہوئے شرم سے پانی پانی ہوجانا چاہئیے۔ بحث کے لئے یہ نقطہ بھی غور کے قابل ہے مگر حقیقت سے بھرپور یہ بات ہم جیسے انسانوں کو حیرت میں جھونکنے کے لیے کافی ہے کہ کسی…

خوشبو کا سفر

(کچھ دوستوں کی یہ خواہش ہے کہ میں مکہ اور مدینہ کے سفر کو الفاظ کی صورت میں قلمبند کروں۔ اگرچہ میرا ذاتی خیال یہ ہے کہ اس کیفیت کی منظر کشی کے لئے الفاظ بے بس ہیں۔) ایک خواہش جس نے شعور کے ساتھ ارتقا کی منازل طے کیں یہ تھی کہ خدا کا وہ گھر…

 مذہبی منافرت سے میرا پہلا سامنا

سکول بس میں بیٹھ کر ہم گھر کی طرف روانہ ہوئے تو حسبِ معمول طعنہ زنی شروع ہو گئی۔ ”سنو! تم نے اپنی پیشانی پر سرخ تلک کیوں نہیں لگایا؟ تم مسلمان بد بُو دار کچرے کا ڈھیر ہو۔“ میں نے غصے پر قابو پاتے ہوئے اپنے ہونٹوں کو کاٹا، ”سرخ تلک ہندو…