وہ تبدیلی جس کی ہمیں بلکل خبر ہی نہیں ہے

جس تبدیلی سے ہم بے خبر ہیں! اس وقت دنیا ایک مستقل بحرانی کیفیت میں مبتلا ہے۔ عالمی لبرل ازم ہر طرف سے گھیرے میں ہے۔جمہوریت زوال پذیر ہے۔ معاشی بحالی نہ ممکن دکھائی دے رہی ہے۔ ابھرتا ہوا چین امریکہ کے لئے خطرے کی گھنٹی بن چکا ہے۔ اور بین…

جا بیٹا اللہ تمہیں پٹواری کر دے

یہ پٹواریوں کی بڑائی کی منہ بولتی دعا ہے۔ قدرت اللہ شہاب نے واقعہ ذکر کیا ہے جس میں وہ کسی بڑھیا کے کام آئے تھے بطور ڈی سی اور مائی نے اُسے دعا دی تھی کہ بیٹا تم پٹواری لگ جاؤ۔ اگر قدرت اللہ شہاب بیورو کریٹ نہ ہوتے یقیناً مائی کی پر خلوص…

نئی حکومت پرانے چیلنج

پاکستانی تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ عوام پر ہمیشہ حکومت ہی کی گئی ہے۔ ان کی خدمت کا جذبہ کہیں نظر نہیں آیا۔ قائد اعظم ؒ کے بعد کوئی لیڈر ایسا نہیں آیا جو ہمارے مسائل کے بارے سنجیدہ ہو اور انہیں حل کرنا چاہتا ہو۔ پاکستان کے مسائل ابتدا میں…

الیکشن اور ذاتی عناد

پاکستانی معاشرہ خاندانی بنیادوں پر قائم ہے۔ اس معاشرے میں خاندانی رسم و رواج اور روایات بہت ہی گہری جڑیں رکھتی ہیں مگر یہ موئے الیکشن آ کر ان جڑوں کو کھوکھلا کر دیتے ہیں۔ جب بھی الیکشن ہوتے ہیں ہارنے جیتنے والی پارٹیوں کے ساتھ ساتھ ہمارے…

تمہیں لوٹا کہوں یا الیکٹیبل؟

گھر والے لوٹے اور سیاست والے لوٹے میں اگرچہ اتنا زیادہ فرق نہیں ہوتا مگر پھر بھی ریکارڈ کی درستگی کے لئے ہم اسے آج کل الیکٹیبل کہنے لگے ہیں تاکہ یہ سیاسی آئٹم کہیں گھر میں بھی نہ آ جائے۔ عام لوٹے اور سیاست والے لوٹے میں پارٹی کا فرق ہوتا…

یہ ہمارے صغیر و کبیر لیڈر

لیڈر یعنی رہنما ہر جگہ پر پائے جاتے ہیں۔ چند معصوم بچے جو گلی میں کھیل رہے ہوں اُن میں سے بھی ایک لیڈر ہوتا ہے جو کھیل کھلا رہا ہوتا ہے۔ اور دوسرے عام بچے اُس سے پوچھ پوچھ کر کھیلتے ہیں یہ الگ بات ہے کہ وہ ہمارے بڑے لیڈروں کی طرح قوم کی…

تھڑے سے دکان تک

حکومت کی بہت سی کوشش کے باوجود حکیم اور عطائی پاکستانی معاشرے سے ختم نہیں کئے جا سکے۔ حکیم اگر ہمارے ہاں کا ہو تو اُس کے ساتھ نیم لگانے کی ضرورت ہی نہیں ہوتی کہ پاکستان کےسارے حکیموں سے ہی جان کا خطرہ ہوتا ہے اور عطائی کے بارے میں آپ مجھ سے…

کچھ کر کے کمال کریں

کافی پرانا اور زبان زدِ عام شعر ہے، میں کس کے ہاتھ پہ اپنا لہو تلاش کروں تمام شہرنے پہنے ہوئے ہیں دستانے لگتا ہے شعر لکھنے والا نیم بے ہوشی یا فُل ٹُن ہوکر کسی بڑے ہسپتال میں گیا اور آپریشن تھیڑوں سے گزرتے ہوئے اس نے یہ شعر لکھا یا پھر وہ…

بچوں کے نئے سیاسی کھیل

آنکھ جو کچھ دیکھتی ہے باقی سارا جسم اس کا اثر لیتا ہے۔ اب تو اثر ہی اثر ہے کیونکہ آنکھ ہر وقت میڈیا پر کچھ نہ کچھ دیکھ رہی ہوتی ہے۔ بڑوں پر تو اس دیکھے کا اثر ہو یا نہ ہو ،بچے اس سے خوب فائدہ اٹھاتے ہیں۔ پہلے ہمارے وطن عزیز کے بچے چھپن…

کامیابی اور بابے

ہمارے اخبارات کے ہفتہ وار تو کیا اتوار وار بلکہ ہر وار کے ایڈیشن میں ایک عرصہ گزرا بہت سے عامل کامل بابوں کا اشتہار دیکھنے میں آتا ہے، بابے تو عامل یا کامل ہونگے ہی ان کا اشتہار واقعی آ، مِل کی دعوت دے رہا ہوتا ہے اور ہمارے اخبار کہتے ہیں…