سیاسی تکیہ کلام

سیاست اس فعل یا عمل کو کہتے ہیں کہ جس کے انجام دینے سے لوگ اصلاح کے قریب اور فساد سے دور ہو جائیں۔امور مملکت کا نظم و نسق برقرار رکھنے والوں کو سیاستدان کہتے ہیں۔سیاست کو بہت وسیع معنی دیےگئے ہیں۔ جس کا شعبہ یا پیشہ سیاست ہو وہ شخص بہت ہی…

کل تک

ہمیں بڑا مزا آتا ہے جب ہمارا باس ہمیں کل تک کی مہلت دے دیتا ہے۔ یہ کل تک ہمارے معاشرے کی پسندیدہ اصطلاح ہے۔ ہمارا وزیر ہو یا کبیر ہو سیاسی کارکن ہو یا سرکاری اہل کار عام آدمی ہو یا طالب علم سب کو کل تک کی مہلت مانگنا نہایت عزیز ہے۔ اگر…

سوشل میڈیا اور سیاسی اختلاف

سماجی رابطے کی ویب سائٹس آج کل سماج کی تخریب کا کام کر رہی ہیں۔ شدت پسندی اور بد اخلاقی ان پر عام ہے۔ جو سائٹ دیکھیں اسی پر ہمیں گالم گلوچ اور دشنام طرازی کی بھرمار نظر آتی ہے۔ ہر کوئی عقل کل بنا ہوا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ سیاسی اور نظریاتی…

انسانوں اور حیوانوں کے لیڈر کا فرق

لیڈر اس وقت کی ہی نہیں بلکہ تمام وقتوں کی اہم ضرورت رہی ہے۔ کیونکہ جب سے انسان نے ہوش سنبھالا ہے اسے ایک ایسے شخص کی ضرورت رہی ہے جو اسے جھوٹا دلاسا دے سکے، بیوقوف بنا سکے ۔ اسے مشکل سے مشکل حالات میں بھی مایوس نہ ہونے دے۔ باتوں میں الجھائے…

خزانہ خالی ہے

ہماری جتنی عمر ہے اس میں جتنی بھی حکومتیں بدلیں، سب کا ایک ہی رونا رہا کہ خزانہ خالی ہے۔ ہمیں نہیں معلوم کہ یہ سیاستدان خزانہ کسے کہتے ہیں مگر پہلے دن سے ہی شور مچانا شروع کر دیتے ہیں کہ خزانہ خالی ہے۔ پاکستان کے خزانے کو آج تک کوئی نہیں…

جنگ ۔۔۔ انسانی ضرورت؟

لیگ آف نیشنز کے ناکام ہونے کی وجہ ۔۔۔ جنگ! اقوام متحدہ کے وجود میں آنے کی وجہ ۔۔۔ جنگ! منظم طریقے سے جب اشرف المخلوقات ایک دوسرے سے گتھم گتھا ہوتا ہے اور اپنی تمام تر توانائیاں ایک دوسرے کو مات دینے میں لگا دیتا ہے تو اسے جنگ کہتے ہیں۔ جنگ…

انسان اور ستارے

اس کرہ ارض پر انسانوں کا جھرمٹ بھی کہکشاں کی طرح ہے۔ بہت سی ہم آہنگی اور بہت سے تضادات لئے ہوئے، مگر ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم۔ جیسا کہ کہکشا ؤں میں ہوتا ہے ویسا ہی ہمارے ہاں انسان بھی کرتا ہے۔ وہاں دُم دار ستارے ہیں تو یہاں بھی بہت سے…

!امریکا بہادر اور ٹشو پیپر

ہم قِصہ پارینہ کا حال لکھتے ہیں۔ اسی واسطے ماضی کے جھروکوں میں جھانک جھانک دیکھتے ہیں کہ کہیں سے کوئی مماثلت نظر آئے تو اُسے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کر کے پیش کر دیا جائے۔ آج کوئی ایسا واقعہ ،کوئی ایسا قِصہ نظر نہیں آ رہا۔ سمجھ نہیں…

وہ تبدیلی جس کی ہمیں بلکل خبر ہی نہیں ہے

جس تبدیلی سے ہم بے خبر ہیں! اس وقت دنیا ایک مستقل بحرانی کیفیت میں مبتلا ہے۔ عالمی لبرل ازم ہر طرف سے گھیرے میں ہے۔جمہوریت زوال پذیر ہے۔ معاشی بحالی نہ ممکن دکھائی دے رہی ہے۔ ابھرتا ہوا چین امریکہ کے لئے خطرے کی گھنٹی بن چکا ہے۔ اور بین…

جا بیٹا اللہ تمہیں پٹواری کر دے

یہ پٹواریوں کی بڑائی کی منہ بولتی دعا ہے۔ قدرت اللہ شہاب نے واقعہ ذکر کیا ہے جس میں وہ کسی بڑھیا کے کام آئے تھے بطور ڈی سی اور مائی نے اُسے دعا دی تھی کہ بیٹا تم پٹواری لگ جاؤ۔ اگر قدرت اللہ شہاب بیورو کریٹ نہ ہوتے یقیناً مائی کی پر خلوص…