نواز شریف کی انتخابی کامیابی و مقبولیت کی وجوہات

سیاست میں کوئی بھی حرف گو حرف آخر نہیں کہلاتا اور نہ ہی آنے والے مستقبل کو سو فیصد من و عن بیان کیا جا سکتا ہے۔ لیکن حقائق اور اعدادو شمار کی بنا پر اندازے ضرور لگائے جا سکتے ہیں اور اکثر اوقات یہ اندازے یا تجزیات درست ثابت ہوا کرتے ہیں۔ اس…

حسن عارف : میرا نوحہ انہی گلیوں کی ہوا لکھے گی

سردیوں کا موسم ہے اور دھند نے تقریباً پورے وطن کو اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے۔ اس موسمی دھند کے علاوہ ایک نظر نہ آنے والی دھند کی دبیز اور طویل لہر بھی موجود ہے جس کے پیچھے وہ قاتل ہیں جو ہمیشہ نامعلوم رہتے ہیں۔ یہ دھند وطن عزیز پر یوں تو ستر…

زینب کی موت کو تماشہ مت بنائیں

سانحہ قصور کے بعد سے جس انداز سے معصوم بچی زینب کی لاش کو اپنے اپنے مزموم مقاصد کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے اس کو دیکھ کر سر ندامت سے جھک جاتا ہے۔ یقین ہی نہیں ہوتا کہ ایک کم سن اور ننھی سی پری کی لاش کو سیاستدان سیاسی عزائم، میڈیا ریٹنگ…

ڈو مور اور نو مور کی جھڑکیوں سے نجات کیلئے ترجیحات اور بیانیے بدلئیے

بالآخر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے واشگاف الفاظ میں پاکستان کو دوغلے پن کا مرتکب قرار دیتے ہوئے نہ صرف دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بد دیانتی کا مرتکب قرار دیا بلکہ کولیشن سپورٹ فنڈ اور امداد بند کرنے کی دھمکی دیتے ہوئے "نو مور" کا اعلان بھی کر…

سعودیہ سے اس بار ڈیل نہیں محض دعائیں آئیں گی

سعودی عرب ان دنوں پھر سے پاکستانی سیاسی سرگرمیوں کا محور بنا ہوا ہے۔ شریف برادران کی سعودی اعلیٰ حکام سے ملاقاتوں کو لے کر وطنِ عزیز میں افواہوں کا بازار گرم ہے۔ ہر تجزیہ کار، صحافی یا دانشور اپنے اپنے اندازوں اور اپنے اپنے "باس" سے لی گئ…

اب عوام کو لالی پاپ نہیں بیچے جاسکتے

وطن عزیز میں ایک دہائی قبل تک اداروں ،شخصیات اور تیار کردہ  بیانیوں کا نرگسیت پسندی کی عادت میں رہنا ممکن تھا۔ لیکن وقت اور زمانے کی رفتار کے ساتھ ساتھ اب یہ ناممکن ہو چکا ہے۔ اسی طرح کچھ عرصہ قبل تک من پسند باتوں اور بیانیوں کو عام عوام پر…

فیض آباد آپریشن میں اور حکومت کی ناکامی

جڑواں شہروں کی سڑکوں پر بائیس دنوں تک حیوانیت اور بربریت کا رقص جاری رہا. اس دھرنے کے آخری دنوں میں سینکڑوں ہزاروں افراد ہاتھوں میں ڈنڈے اور پتھر اٹھائے سڑکوں پر دندناتے پھر رہے تھے.فیض آباد آپریشن کی ناکامی سے ان لوگوں کو شہہ ملی تھی۔…

شریف خاندان ایک بار پھر کٹہرے میں

جوائنٹ انویسٹیگیشن ٹیم کے سامنے آج حسین نواز کو پیشـں ہوتے دیکھا تو آنکھوں کے سامنے مشرف دور کا منظر آ گیا۔ غالباً سال 2000 یا 2001 کا وقت تھا جب شہباز شریف کے صاحبزادے حمزہ شہباز کو روزانہ صبح آٹھ بجے کبھی احتساب کی عدالت اور کبھی مشرف کے…

رضیہ اور تین ٹھگ

ٹھیک جیسے کوٹھے پر بیٹھی ایک فاحشہ سے ہر گاہک اپنی مرضی کر کے لطف حاصل کرتا ہے، کچھ ایسی ہی مثال وطن عزیز کے سیاسی اور سماجی ڈھانچے کی ہے۔ جس کا جب جی چاہتا ہے، اٹھتا ہے اور اپنی مرضی کا راگ الاپنے کے بعد اپنے اپنے سیاسی اور مالی مفادات کی…

قصور عام آدمی کا ہے

جمہوریت نام کی کوئی بھی چیز وطن عزیز میں نہ پہلے تھی اور نہ آج ہے۔ جمہوریت عوام کے نمائندوں کو عوام کے زریعے چن کر ان کے ہاتھ میں مملکت کی باگ دوڑ دینے کا نام ہے۔ بدقسمتی سے یہ تعریف ہمارے یہاں صرف کتابوں یا نعروں میں ہی دکھائی دیتی ہے،…