ہم محسنِ پاکستان کو دو گز زمین بھی نہ دے سکے 

تحریکِ پاکستان کے بڑے رہنمائوں میں سے ایک نام چوہدری رحمت علی کا بھی ہے بلکہ اگر یہ کہا جائے کہ تحریکِ پاکستان کا آغاز ہی اُس دن ہوا تھا جس دن چوہدری رحمت علی نے لفظ "پاکستان" تخلیق کیا تھا، تو غلط نہ ہوگا۔ انہوں نے "اب نہیں تو کبھی نہیں"…

سستی شہرت کیلئے زندگی کی بازی

کہا جاتا ہے کہ انسان خطا کا پتلہ ہے اور اس سے غلطیاں سرزد ہوتی رہتی یں لیکن بعض  ایسی ہوتی ہیں جو کہ تباہی کا ایک نہ ختم ہونے والے سلسلہ کو جنم دیتی ہیں اور اس کی ذد میں آکر کئی گھر تباہ ہوجاتے ہیں ۔  ایسی ہی ایک غلطی یا نادانی کچھ عرصہ…

سانجھا شہید

13 اپریل 1919 کا ہندوستان۔ جگہ ہے جلیانوالہ باغ،  امرتسر۔ جہاں پر ہندو مسلمان سکھ اس تاریخی باغ میں اکٹھے ہوئے ہیں۔ مقصد انگریز سرکار کی جانب سے دو مقامی لیڈروں ستے پال اور ڈاکٹر سیف الدین کچوال کی گرفتاری اور ان کے صوبہ بدر کرنے کی صورتحال…

‘لندن برج از ڈاؤن’

کیا کبھی آپ نے یہ سنا ہے کہ کسی شخصیت کی موت پر بہت پہلے سے ہی اس کے مرنے کے بعد کی تقریبات کی منصوبہ بندی کئی سالوں سے مکمل کر کے محفوظ کر لی گئی ہو؟ جی ہاں یہ ایک حقیقت ہے۔ ملکہ برطانیہ الزبتھ دوم کی موت کے بعد کیا کیا ہوگا اس کا پروگرام…

مائی عیدو، ماضی کا ایک کردار

اس کی عمر ستر پچھتر سال کے درمیان، جسم دبلا پتلا، قد لامبا، سر پہ سفید بالوں کا گچھا جس میں کہیں کہیں کوئی پرانی لگائی مہندی کا رنگ بھی نظر آ جاتا، سردی ہو یا گرمی ایک ہی پرانی شلوار قمیض پہنے جس میں کہیں کہیں پیوند لگے ہوتے، لمبے سوکھے…

سو صدیوں کی سائنسی پیشگوئی

نسل انسانی ہزاروں سال کے ارتقائی عمل کے بعد اگر ایک جانب تہذیب و تمدن کی انتہائی بلندیوں پر براجمان ہے تو دوسری جانب سائنسی ترقی سے کشش ثقل کی طنابیں توڑنے سے لیکر چاند اور مریخ پر کامیاب مشن بھیجنے کے بعد اب اس کی نظریں اپنے نظام شمسی سے…

زندگی کی آخری شرط

ایبٹ آباد کوہالہ کے تفریحی مقام پر دوستوں نے موبائل فون اور 15 ہزار روپے دینے کی شرط پر دوست کو تیر کر دریا عبور کرنے پر اکسایا اور گوجرانولہ کا علی ابرار اپنے ماں پاب بہن بھائیوں کو تمام عمر کا دکھ  دے کر اس دنیا سے چلا گیا۔ شرط بھی کتنی؟…

بے نام نامعلوم ایف آئی آر

پاکستان میں لوگ خاندانی دشمنی میں مرتے ہیں۔ حادثوں، قدرتی آفات اور وبائی امراض پھوٹ پڑیں تو مرتے ہیں یا طبعی موت اس کی وجہ بنتی ہے اور اسے تقدیر کا لکھا سمجھ کر صبر شکر کر لیا جاتا ہے کیونکہ کچھ چیزیں انسان کے بس میں نہیں ہوتیں لیکن اگر کسی…

لندن دہشتگردی، اور پاکستانی تارکینِ وطن کی بڑھتی مشکلات

لندن میں دہشت گردی کے حالیہ واقعہ میں ایک پاکستانی نژاد برطانوی شہری خرم بٹ کا نام آنا پاکستان کے ان امن پسند شہریوں خصوصاً تارکین وطن کے لیے ایک دفعہ پھر باعثِ تشویش بن گیا ہے جو ہمیشہ یہ بات ثابت کرنے میں لگے رہتے ہیں کہ پاکستانی شہری…

سوزی اور لکھی رانی – پھر وہی کہانی؟

سوزی لاہور چڑیا گھر کی واحد ہتھنی 35 سال کی عمر میں مرگئی۔ مجھے وہ دن یاد ہے جب میں نے جنگ اخبار کے اندرونی صفحے پر وہ تصویر دیکھی تھی جس میں سوزی کو ٹرک سے اتارا جارہا تھا۔ اس وقت وہ ایک ننھی بچی کی طرح لگ رہی تھی۔ ڈری ڈری، سہمی سہمی۔ اس…