وجودِ زن سے ہے تصویرِ کائنات میں رنگ

تعلیمی اداروں کا اصل حسن ان کی علمی، تخلیقی، تحقیقی، جسمانی اور تفریحی سرگرمیاں ہوتی ہیں۔ تقریری مقابلوں، مباحثوں اور مکالموں سے نوجوان نسل اپنے مسائل سمجھنے اور ان کا مقابلہ کرنے کے قابل ہوتی ہے۔ جیت کی لذت اور ہار کی شدت ان کے جواں جذبوں…

برف پوش مری

تعلیمی عمل اگر مشینی عمل بنا دیا جائے تو طالبِ علم کی شخصیت گہنا جاتی ہے۔ کتابی کیڑا پن شخصیت کو چاٹتا رہتا ہے۔ طوطا سازی کا عمل یا تو نمو کے امکانات ختم کر دیتا ہے یا گھٹن پیدا کرتا ہے۔ تعلیم کا تفریح سے وہی تعلق ہے جو پانی کا پھلواری سے…

احمد فراز کا آخری مشاعرہ

بارہ جنوری 1931ء خانہ برق میں جس تجلی کا ظہور ہوا وہ نوجوانی میں گوہر و شرر برقی کے نشیبوں سے ہوتی اپنے فراز کو پہنچ گئی اور ظلمتِ شب میں 14 شمعیں روشن کرنے کے بعد دس سال سے ایچ ایٹ اسلام آباد کی خاک کو چمکا رہی ہے۔ غیر معمولی شخصی قامت کے…

معیار ہے معیار سے کم کچھ نہیں کہتے

کہوٹہ سنگلاخ لسانی پٹی میں واقع ہونے کے باوجود ان چھوٹے شہروں میں شمار ہونے لگا ہے جہاں سخن کے چراغ کی لو بہت تیز ہے۔ مشاعرے، شعرا کے ساتھ شامیں اور کتابوں کی رونمائی اور پذیرائی کی تقاریب شہر کا معمول ہیں۔ اس کی تازہ ترین مثال اختر عثمان…

ایک دن بھمبور میوزیم میں

کراچی سے ٹھٹہ کی طرف جائیں تو یہ بتانے والا کوئی نہیں کہ دیبل کدھر ہے لیکن بھمبور سے سب واقف ہیں۔ نیشنل ہائی وے پر ساٹھ کلومیٹر کے فاصلے پر دھابیجی اور گھارو کے درمیان دیبل کی قدیم بندرگاہ کے آثار اور میوزیم ہے۔  میوزیم کے باہر ایک بورڈ پر…

مانکیالہ اسٹوپا، گندھارا تہذیب کی ایک یادگار

عالی دماغ چانکیا نے چندرا کو تلوار تھمائی تو اس کی تراش دیکھنے سے تعلق رکھتی تھی۔ پوتا دادا سے دو قدم آگے تھا۔ کلنگ میں اتنا خون بہایا کہ دل خونریزی سے ہمیشہ کے لیے بھر گیا۔ بادشاہ بھکشو بن گیا۔ پاٹلی پتر سے قندھار تک بدھا کے تبرکات دفن…

سہالہ ریلوے اسٹیشن کی سیر اور کچھ تجاویز

فرنگیوں نے سکھوں کو لگام دینے کے بعد پوٹھوہاری شیروں کو بیلٹ باندھنے کا پروگرام بنایا۔ راولپنڈی برٹش آرمی کی ناردرن کمانڈ کا ہیڈ کوارٹر مقرر ہوا۔ لاہور اور پشاور کے درمیان ہنگامی بنیادوں پر ریلوے ٹریک بچھایا گیا۔ جگہ جگہ ریلوے اسٹیشن بنا…

خالقِ اسمِ وطن چوہدری رحمت علی

جس زبان میں بچے کو لوری دی جائے وہ اس کی محبوب ترین زبان ہوتی ہے۔ ماں بولی کا مقابلہ کوئی اور زبان نہیں کر سکتی۔ لیکن جس طرح بڑی مچھلی چھوٹی مچھلیوں کو کھا جاتی ہے اسی طرح بڑی زبانیں چھوٹی زبانوں کو نگل جاتی ہیں۔ معاشرے کے بیدار لوگ ان…

بس ایک صلح کی صورت میں جان بخشی ہے – آزاد کشمیر کے یادگار مشاعرے کی روداد

(29 اکتوبر 2016 میں بزم دیار سخن بیٹھک، تحصیل بلوچ، سدھنوتی، آزاد کشمیر کے یادگار مشاعرے کی روداد) شاعری انسان کے خمیر میں ہے۔ لوری سے کتبے تک جذبوں کا موثر ترین ذریعہ اظہار شاعری ہی رہا ہے۔ کشمیر کی ادبی تنظیمیں اور تعلیمی اداروں کی لٹریری…

وزیراعظم کا کہوٹہ جلسہ، اور فرانس کی شہزادی

کہوٹہ میں کئی دن سے ہل چل مچی ہوئی تھی۔ انتظامی مشینری جلسے کی تیاریوں میں رات دن مصروف تھی۔ چہ مہ گوئیاں جاری تھیں کہ کہوٹہ اسلام آباد موٹر وے کا آٹھ سالہ پرانا وعدہ پورا ہونے جا رہا ہے۔ کہوٹہ میں یونیورسٹی کے قیام کا اعلان ہونے والا ہے۔…